Nisbat Ka Faida


حضرت بزار رَحْمَۃُ اللہ تَعَالٰی عَلَیْہ فرماتے ہیں :’’حضرت سیدنا شیخ عبدالقادر جیلانی قطب ربانی رَحْمَۃُ اللہ تَعَالٰی عَلَیْہ سے عرض کیا گیا کہ’’ کوئی شخص آپ رَحْمَۃُ اللہ تَعَالٰی عَلَیْہ کا نام لیتا ہے لیکن نہ تو اس نے آپ رَحْمَۃُ اللہ تَعَالٰی عَلَیْہ سے بیعت کی ہے اور نہ ہی آپ رَحْمَۃُ اللہ تَعَالٰی عَلَیْہ کا خرقہ پہنا ہے تو کیا وہ آپ کا مرید کہلا سکتا ہے؟‘‘یہ سن کر آپ رَحْمَۃُ اللہ تَعَالٰی عَلَیْہ نے فرمایا:’’جو شخص میری طرف منسوب ہو اور میرا نام لے اللہ عَزَّوَجَلَّکے ہاں وہ مقبول ہوگا اور اللہ عَزَّوَجَلَّ اس پر مہربان ہوگا اگرچہ وہ برے عمل ہی کیوں نہ کرتا ہواور وہ میرامرید ہے، بے شک میرے رب عَزَّوَجَلَّ نے مجھ سے وعدہ فرمایاہے کہ میرے مریدوں اور میرے ہم مذہبوں اور میرے دوستوں کو جنت میں داخل کرے گا۔‘‘(المرجع السابق)

s